Matan, Department of Urdu & Iqbaliat, The Islamia University - Bahawalpur

متن (اردو ریسرچ جرنل)

Department of Urdu, The Islamia University of Bahawalpur
ISSN (print): 2708-5724
ISSN (online): 2708-5732

Author Guidelines

نوٹ: ہدایات سے ہٹ کر بھیجا گیا کوئی بھی مقالہ اشاعت کے لیے ناقابلِ قبول ہو گا۔ مقالہ نگاروں کی ذاتی آراء اور بیانات و نتائج سے  'متن' کی مجلسِ ادارت کا متفق ہونا ضروری نہیں۔ 

 

1۔   "متن"  اُردو زبان و ادب کا تحقیقی مجلہ ہے سو اس میں شائع ہونے کے لیے بھیجا جانے والا مقالہ بنیادی مضمون (اُردو (سے متعلق ہی کسی موضوع پر ہونا چاہیے۔ علاوہ ازیں مضمون کی نوعیت بھی خالصتاً تحقیقی (کیفیتی یا کمیتی) ہو۔

1.      "Matan" is a journal of Urdu language and literature, so the research paper to be submitted must be on a subject related to Urdu. In addition, the nature of the article should be purely research (qualitative or quantitative).

2۔ مقالہ صرف ایم ایس ورڈ(MS Word) میں کمپوزڈ شکل میں ہونا چاہیے۔ ایم ایس ورڈ میں فونٹ Jameel Noori Nastaleeq  ہو، بنیادی متن کا فونٹ سائز 14 جب کہ اقتباسات کے لیے 12 ہونا چاہیے۔ ایم ایس ورڈ کی فائل بطور نمونہ  اس لنک پر  موجود ہے۔یہاں کلک کر کے   ڈاؤنلوڈ کریں اور  اسی میں اپنی فائل تیار کریں۔ یہ نمونہ جاتی مسل MS Office 365 پر بنائی گئی ہے، لہذا اسی ورژن میں یا  (docx.) کی صورت میں ڈھال کر ای میل کریں۔

2.      The article should be in composed form in MS Word. The font should be 'Jameel Noori Nastaleeq' and the font size Basic Content 14 and for the quotations 12. Specimen File may be download by clicking this link. This File is Based upon MS Office 365. Try to furnish the file in said version or (.docx) format.

3۔ مقالہ بھیجنے سے پہلے تصدیق کر لیں کہ:

·    آپ نے مجلہ "متن" کی مختلف معاملات میں پالیسیز کو اچھی طرح پڑھ لیا ہے۔

·    مقالہ پروف کی اغلاط سے پاک ہو۔

·    مقالہ سرقے سے پاک ہو کیوں کہ اشاعت سے پہلے اسے TURNITINسافٹ وئیر میں باقاعدہ چیک کیا جائے گا اور اگر سرقہ طے شدہ حد (19فیصد) سے زیادہ پایا گیا تو مقالہ ناقابلِ اشاعت ہو   گا۔ علاوہ ازیں مقالہ نگار اپنے مقالے کے ساتھ ہی سرقے سے پاک ہونے کا  ایک اقرار نامہ جمع کرانے کا پابند ہو گا جو   اس لنک سے حاصل کیا جا سکتا ہے۔

3. Before submitting an article, please assure that:

·         You have properly read the policies of "Matan" regarding different matters.

·         Article is free of proof mistakes.

·         Article is free of plagiarism because it will go through the plagiarism check by TURNITIN software and if the similarity index comes out is more than 19%, article won't get published. Moreover, the author is bound to submit an affidavit of plagiarism free statement that can be downloaded from this Link.

 

4۔ مجلہ "متن" کو مقالہ بھیجنے کے بعد جب تک اس کے قابلِ اشاعت/ناقابلِ اشاعت/کچھ تبدیلیوں کی صورت میں قابلِ اشاعت ہونے کی بابت مجلسِ ادارت کی طرف سے اطلاع موصول نہ ہو، اُسے کسی اور جگہ اشاعت کے لیے نہ بھیجا جائے۔

4.      After submitting a paper to the "Mat'n", don't send it to any other publishing agency until or unless you receive any email from "Matاn" about its status like unpublished/required any changes etc.

5۔ مقالہ نگار کا نام، مقالے کا عنوان ، تلخیص(abstract)اور کلیدی الفاظ(keywords)اُردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں دیے جائیں اورمقالے کی تلخیص ڈیڑھ سو سے دو سو الفاظ پر مشتمل ہو۔

5.      The name of author (designation, address), the title of the article, the abstract and the keywords should be given in both Urdu and English. Abstract should consist of 150 to 200 words.

6۔   مقالے کے آخر میں حوالہ جات ،حواشی اور تعلیقات لازمی دیے جائیں۔

6.   References must be given at the end of the research paper.

7۔ مقالے میں حوالہ جات کے اندراج کا مندرجہ ذیل طریقہ اختیار کیا جائے:

 

کتاب کا حوالہ:

مصنف کا نام، کتاب کا نام( Font Sakkal Majalla )( شہر کا نام:  ادارۂ اشاعت،سنِ اشاعت)، صفحہ نمبر۔

مثال:

     گوپی چند نارنگ،ساختیات، پس ساختیات اور مشرقی شعریات (لاہور:سنگِ میل پبلی کیشنز، ۱۹۸۵ء)، ص۔

     اگر ایک ہی کتاب سے دویا تین دفعہ حوالہ آئے تو بار بار مکمل حوالہ لکھنے کی بجائےمصنف کا نام،کتاب کا نام اور صفحہ نمبر لکھنا کافی ہے۔

 

رسالے کا حوالہ:

مصنف کا نام، ’’مضمون کا عنوان‘‘، مشمولہ:رسالے کا نام( Font Sakkal Majalla) ( شہر کا نام: ادارۂ اشاعت،سنِ اشاعت)،جلد نمبر، شمارہ نمبر، صفحہ نمبر۔

مثال:

     گوپی چند نارنگ،’’ادب اور سیاست کا رشتہ‘‘، مشمولہ:بازیافت(لاہور: شعبہ اردو پنجاب یونیورسٹی، ۱۹۸۵ء)،جلد۱۲،شمارہ۲، ص۔

 

اگر انٹرنیٹ سے کسی آن لائن فائل کا حوالہ دیا جائے تو  پیج لنک کے علاوہ تاریخ اور وقت لکھنا بھی ضروری ہے۔

7.      Following reference style should be followed:

In case a book is cited:

Author name (full)Book name (with the font name of SAKKAL MAJALLA for Urdu, and ITALIC style for English), bracket open: City: Publishing agency, Date bracket close, page no.

e.g;

Steven Grosby, Nationalism (New York: Oxford university press, 2005), P 44.

 If two or three references are made from the same book, it is sufficient to write the book's name and page number instead of repeated reference.

In case an article from any journal is cited:

Author name (full/principle)Article Title, in: Name of the Journal (with the font name of 'Naskh' or Batool Unicode for Urdu, and Italic style for English), bracket open: City: Publishing agency, Date bracket close, Volume No, Issue No, Page No.

e.g;

Ali Abbas, "The role of literature in society", In: Oriental Journal of Literature, (Lahore: Punjab University, 2011), Vol.12, Issue 02, P 21.

If any online material is cited, then give the Time & Date of citation along with the link address.

FOR ANY FURTHER ASSISTANCE FEEL FREE TO CONTACT:

Image Description

Dr. Ghulam Asghar

Associate Editor

Department of Urdu, The Islamia University, Bahawalpur

  • asghar.khan@iub.edu.pk
  • +92 300 6850004